:: الوقت ::

ہمارا انتخاب

خبر

زیادہ دیکھی جانے والی خبریں

ڈاکومینٹس

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت اپنے زوال کے سفر پر تیزی سے رواں دواں ہے اور ہرآنے والا دن اس غاصب اور غیر قانونی حکومت کو سیاسی تنہائیوں کی طرف دھکیل رہا ہے
اسلامی تحریکیں

اسلامی تحریکیں

ماضی اور حال کی اسلامی تحریکوں کا اگر گہرائی سے جائزہ لیا جائے تو یہ بات واضح ہوتی ہے کہ جہاں قیادت بابصیرت اور اپنے اھداف میں مخلص تھی وہاں کامیابیاں نصیب ہوئیں اور قربانیاں رنگ لائیں اور جہاں قیادت ۔۔
وهابیت

وهابیت

برطانوی سامراج کا لگایا یہ درخت ایک شجر سایہ دار میں تبدیل ہوکر طالبان،داعش،النصرہ۔الشباب اور بوکوحرام کی صورت میں اسلام اور مسلمانوں کو کھوکھلا کرنے میں پیش پیش ہے ۔
طالبان

طالبان

اسلام اور افغانستان کی آذادی کے نام پر وجود میں آنے والا یہ گروہ پاکستان اور افغانستان کے لئے ایک ایسے ناسور میں بدل گیا ہے جو نہ صرف اسلام کو بدنام کرنے میں پیش پیش ہے بلکہ اس کے وجود سے خطے کی اسلامی قوتوں کو بھی شدید نقصان
استقامتی محاز

استقامتی محاز

حزب اللہ کے جانثاروں نے اپنی لہو رنگ جد و جہد سے غاصب صیہونی حکومت کو ایسی شکست دی ہے جس سے خطے میں طاقت کا توازن مکمل طور پر تبدیل ہوتا نظر آرہا ہے اور استقامتی اور مقاومتی محاز
یمن

یمن

یمن کیجمہوری تحریک نے آل سعود سمیت خطوں کی دیگر بادشاہتوں کو نئے چیلنجوں سے دوچار کردیا ہے۔سعودی جارحیت آل سعود کے لئے ایک دلدل ثابت ہوگی۔
پاکستان

پاکستان

امریکی مداخلتوں کا شکار یہ ملک آج اس مرحلہ پر پہنچ گیا ہے کہ امریکہ کے علاوہ خطے کے بعض عرب ممالک بھی اسے اپنا مطیع و فرماندار بنانا چاہتے ہیں
داعش

داعش

سی آئی اے اور موساد کی مشترکہ کوششوں سے لگایا گیا یہ پودا جسے آل سعود کے خزانوں سے پالا پوساگیا اب عالم اسلام کے ساتھ ساتھ اپنے بنانے والوں کے لئے بھی خطرہ۔۔۔۔
alwaght.com
انٹرویو

ہمارے میزائل خلیجی ممالک کے دار الحکومتوں تک پہنچیں گے : پروفیسر عبد العزیزالترب

Wednesday 22 February 2017
ہمارے میزائل خلیجی ممالک کے دار الحکومتوں تک پہنچیں گے : پروفیسر عبد العزیزالترب

الوقت - یمن کے اقتصادی محاصرے اور اس محاصرے کی وجہ سے یمنی عوام کو در پیش مسائل نیز مذکورہ محاصرے پر عالمی برادی کے موقف اور یمن کے مظلوم عوام تک انسانی امداد پہچانے جیسے مسائل کے تعلق سے ہم نے یمن کے صدر کے مشیر اور یمنی کے اقتصادی امور کے ماہر پروفیسر عبد العزیز الترب سے گفتگو کی۔  پیش خدمت ہے اہم اقتباسات :

الوقت : یمنی عوام کے اقتصادی محاصرے کے کیا اثرات مرتب ہو رہے ہیں، خاص طور پر گیہوں اور دوائیں جیسی اشیاء کی در آمد پر پابندی سے کیا نقصان ہو رہا ہے، آپ لوگ اس تعلق سے کیا کر رہے ہیں؟

جواب : در حقیقت ہمارے پاس گیہوں کے ذخائر ہیں جو کافی عرصے کے لئے کافی ہیں، جبکہ ہم نے عالمی برادری اور بین الاقوامی تنظیموں سے بھی امداد اور یمن کے محاصرے کو ختم کرنے اور ائیرپورٹ کھولنے کے لئے سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں پر دباؤ ڈالنے کی اپیل بھی کی ہے۔ ہم پائمردی اور صبر کا مظاہرہ کر رہے ہیں، جیسا کہ ہم نے رمضان المبارک میں اس مرحلے کا سامنا کیا، ہم نے پیٹ پر پتھر باندھے، اپنی ضرورتوں کو کم کیا، ایک وقت کا کھانہ کھاتے ہیں، لیکن ہم کبھی بھی جارحین کے سامنے سر تسلیم خم نہیں کریں گے، انشاء اللہ فتح ہماری ہی ہوگي۔ ظالم پر مظلوم کی فتح کا دنیا مشاہدہ کرے گی۔

الوقت : کیا سبب ہے کہ سعودی عرب نے میدان جنگ سے یمن کے محاصرے پر توجہ مرکوز کر رکھی ہے، اس کے کیا سبب ہیں؟

جواب : ان کا یہ دعوی ہے کہ ہم کچھ مشہور حکومتوں کی جانب سے امداد حاصل کر رہے ہیں لیکن جارح حکومتیں منافق ہیں اور جھوٹے دعوے کرتی ہیں ان کے پاس اپنے مدعا کو ثابت کرنے کے لئےکوئی دلیل نہیں ہے۔ ہم نے ان سے بارہا کہا کہ وہ ٹیلیویژن اور دستاویزات کے ذریعے اپنے دعوی پر دلیل پیش کریں لیکن جھوٹ کی کوئی حد نہیں ہوتی۔ اتنا عرصہ گزرنے کے باوجود جارح حکومتیں ابھی تک اپنے کسی بھی ہدف میں کامیاب نہیں ہو سکیں ہیں، اسی لئے انہوں نے جب یہ سمجھ لیا کہ میدان جنگ میں یمنی عوام سے مقابلہ نہیں کیا جا سکتا تو انہوں نے ملک کا اقتصادی محاصرہ کر دیا تاکہ بھوک اور غربت کی وجہ سے یمنی عوام کو تسلیم پر مجبور کر دیں لیکن ان کو یہ سمجھ لینا چاہئے کہ یمنی عوام اس سے پہلے کبھی بھی اتنے متحد نہیں تھے جو اب ہیں، ہم آخری سانس تک سعودی عرب اور اس کے اتحادی ممالک کے ساتھ مزاحمت کرتے رہیں گے۔

الوقت : یمن کے مظلوم عوام کے تعلق سے انسانی حقوق کی تنظیموں اور عالمی اداروں کیا موقف ہے؟

جواب : بخدا ابھی تک ان اداروں اور تنظیموں کی جانب سے کوئی بھی مدد حاصل نہیں ہوئی ہے جس سے یہ ثابت ہو جاتا ہے کہ عالمی تنظیمیں اور ادارے، جارح حکومتوں پر دباؤ ڈالنے کی توانائی نہیں رکھتیں۔ اگر ہم اقوام متحدہ کی قرارداد 2216 کو دیکھیں تو اس میں صاف کہا گیا ہے کہ کسی بھی ملک کے ائیرپورٹ، آبی راستے اور زمینی راستے کو بند کرکے اس کا اقتصادی محاصرہ کرنا جائز نہیں ہے، یمن کے حوالے سے تمام قوانین کو نظر انداز کیا جا رہا ہے۔ یمن عوام بھوک سے تڑپ رہے ہیں اور عالمی برادری کھڑی تماشا دیکھ رہی ہے۔

الوقت : اقوام متحدہ نے بارہا یمن میں انسانی المیہ کی بابت خبردار کیا ہے، اس عالمی ادارے نے ابھی تک اس تعلق سے سنجیدہ اقدام کیوں نہیں کئے؟

جواب : یہ اقوام متحدہ کی نا اہلی کا ثبوت ہے۔ سعودی عرب نے اپنے پیسوں سے عالمی رہنماؤں کو خرید لیا ہے، عالمی تنظیمیں اور ادارے سعودی عرب کے اشارے پر کام کر رہے ہیں۔ کسی کو بھی یمنی عوام پر ترس نہیں آ رہا ہے، سب تماشائی بنے دیکھ رہے ہیں۔

ٹیگ :

سعودی عرب یمن حملے جواب میزائل

نظریات
نام :
ایمیل آئی ڈی :
* ٹیکس :
سینڈ

Gallery

تصویر

فلم

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے