:: الوقت ::

ہمارا انتخاب

خبر

زیادہ دیکھی جانے والی خبریں

ڈاکومینٹس

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت اپنے زوال کے سفر پر تیزی سے رواں دواں ہے اور ہرآنے والا دن اس غاصب اور غیر قانونی حکومت کو سیاسی تنہائیوں کی طرف دھکیل رہا ہے
اسلامی تحریکیں

اسلامی تحریکیں

ماضی اور حال کی اسلامی تحریکوں کا اگر گہرائی سے جائزہ لیا جائے تو یہ بات واضح ہوتی ہے کہ جہاں قیادت بابصیرت اور اپنے اھداف میں مخلص تھی وہاں کامیابیاں نصیب ہوئیں اور قربانیاں رنگ لائیں اور جہاں قیادت ۔۔
وهابیت

وهابیت

برطانوی سامراج کا لگایا یہ درخت ایک شجر سایہ دار میں تبدیل ہوکر طالبان،داعش،النصرہ۔الشباب اور بوکوحرام کی صورت میں اسلام اور مسلمانوں کو کھوکھلا کرنے میں پیش پیش ہے ۔
طالبان

طالبان

اسلام اور افغانستان کی آذادی کے نام پر وجود میں آنے والا یہ گروہ پاکستان اور افغانستان کے لئے ایک ایسے ناسور میں بدل گیا ہے جو نہ صرف اسلام کو بدنام کرنے میں پیش پیش ہے بلکہ اس کے وجود سے خطے کی اسلامی قوتوں کو بھی شدید نقصان
استقامتی محاز

استقامتی محاز

حزب اللہ کے جانثاروں نے اپنی لہو رنگ جد و جہد سے غاصب صیہونی حکومت کو ایسی شکست دی ہے جس سے خطے میں طاقت کا توازن مکمل طور پر تبدیل ہوتا نظر آرہا ہے اور استقامتی اور مقاومتی محاز
یمن

یمن

یمن کیجمہوری تحریک نے آل سعود سمیت خطوں کی دیگر بادشاہتوں کو نئے چیلنجوں سے دوچار کردیا ہے۔سعودی جارحیت آل سعود کے لئے ایک دلدل ثابت ہوگی۔
پاکستان

پاکستان

امریکی مداخلتوں کا شکار یہ ملک آج اس مرحلہ پر پہنچ گیا ہے کہ امریکہ کے علاوہ خطے کے بعض عرب ممالک بھی اسے اپنا مطیع و فرماندار بنانا چاہتے ہیں
داعش

داعش

سی آئی اے اور موساد کی مشترکہ کوششوں سے لگایا گیا یہ پودا جسے آل سعود کے خزانوں سے پالا پوساگیا اب عالم اسلام کے ساتھ ساتھ اپنے بنانے والوں کے لئے بھی خطرہ۔۔۔۔
alwaght.com
تجزیہ

یورپ میں دائیں بازو کی جماعتوں کے طاقتور ہونے کے اثرات

Tuesday 6 December 2016
یورپ میں دائیں بازو کی جماعتوں کے طاقتور ہونے کے اثرات

الوقت- یورپ میں 2008 میں اقتصادی بحران پیدا ہونے اور اس بحران سے مقابلے کے لئے یورپی ممالک کے سیاسی نظام کے ڈھانچے کی کمزوری کی وجہ سے اس علاقے میں مہاجرین کے داخل ہونے میں اضافہ ہوا اور یورپ میں بے روزگاری 7 فیصد سے بڑھ کر 11 فیصد ہوگئی۔ اسی لئے یورپ کی بہت سے حکومتیں عوام کو دی جانے والی سہولیات کو ختم کرنے پر مجبور ہو سکی تاکہ اس طرح سے وسیع بحران پر لگام لگا سکیں۔  

یہ صورتحال شام، عراق اور شمالی افریقہ میں جنگ کی حالت سے بحرانی ہونے سے مزید بحرانی ہوگئی۔ اقوام متحدہ کی جانب سے جاری کئے گئے اعدا و شمار کے مطابق 2015 میں یونان میں ایشیائی اور افریقی مہاجرین کی تعداد گزشتہ برسوں کی بہ نسبت 408 فیصد زیادہ رہی ہے۔

یورپ میں داخل ہونے والے مہاجرین کی ثقافت، تعلیمات اور دین، یورپ میں رائج ثفافت اور دین سے بہت زیادہ متفاوت ہے اسی لئے اس بر اعظم میں مختلف قسم کے اجتماعی اور معاشرتی مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔ ان شہروں اور ساحلی علاقوں کی صورتحال مکمل طور پر تبدیل ہوگئی ہے جہاں پناہ گزین داخل ہو رہے ہیں اور یورپی شہریوں اور مہاجرین کے درمیان شدید جھڑپوں کے واقعات بھی رونما ہوئے ہیں۔ انہیں مسائل میں سے بھیک مانگنا اور چوری کے واقعات میں اضافہ بھی ہے جس نے یورپ کے مقامی افراد کی تشویش میں اضافہ کر دیا ہے۔ یہی سبب ہے کہ مہاجرین کو قبول کرنے والی حکومتیں بھی اپنے بجٹ سے جو ٹیکس سے پورا کیا جاتا ہے، اپنے بن بلائے مہمان کی خدمت کرنے اور ان کو سہولیات فراہم کرنے پر مجبور ہیں۔

ان حالات میں مہاجرت کو محدود کرنے کے لئے قومی سرحدوں کو مضبوط کرنے، اس بحران کو شدت اختیار کرنے سے روکنے کے لئے لئے یورپی پارلیمنٹ کی پالیسیوں کا ساتھ نہ دینا اور اسی طرح طاقتور فلاحی حکومتوں کا بر سر اقتدار آنا، یورپ کے عوام کے اہم مطالبات میں تبدیل ہوگئے۔ اس بنیاد پر بائیں بازو کی جماعتیں عوام میں زیادہ مقبول ہوگئیں، یورپ کے عوام کو امید تھی کہ بائیں بازو کی حکومتیں، مذہب عیسائی کو رائج کرکے اور ان کی مذہبی شناخت کی حفاظت کرکے مسلمان مہاجرین کے مقابلے میں ان کے دین و ایمان کا دفاع کر سکتی ہیں۔

اس امید کے عملی جامہ پہننے کی وجہ سے برطانیہ کے زیادہ تر افراد نے یورپی یونین سے برطانیہ کے نکلنے کے حق میں ووٹ ڈالا اور اس کا مطلب یہ ہے کہ اس ملک میں بائیں بازو کی پارٹیوں کا مقام مضبوط ہو رہا ہے۔  

یورپ کے تقریبا تمام ممالک میں الگ الگ انداز میں بائیں بازوں کی پارٹیاں سرگرم ہیں۔ ان جماعتوں کے رہنما شدت پسند ہونے کے ساتھ ہی اپنی قوم و ملک کی ثفافت اور شناخت کا دفاع اور اقتصادی اور مہاجرین کے بحران کے بارے میں اعتدال پسند نظریہ اختیار کرکے عوام کو اپنا ہمنوا بنانے میں کامیاب رہی ہيں۔ ان پارٹیوں کی ترقی اور وسعت کا عمل تقریبا ایک عشرہ پہلے شروع ہوگیا ہے گرچہ یہ پارٹیاں 70 اور 80 کے عشرے میں وجود میں آئی ہیں۔

ٹیگ :

اقوام متحدہ یورپ بائیں بازو پارٹی جماعت

نظریات
نام :
ایمیل آئی ڈی :
* ٹیکس :
سینڈ

Gallery

تصویر

فلم

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے