:: الوقت ::

ہمارا انتخاب

خبر

زیادہ دیکھی جانے والی خبریں

ڈاکومینٹس

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت اپنے زوال کے سفر پر تیزی سے رواں دواں ہے اور ہرآنے والا دن اس غاصب اور غیر قانونی حکومت کو سیاسی تنہائیوں کی طرف دھکیل رہا ہے
اسلامی تحریکیں

اسلامی تحریکیں

ماضی اور حال کی اسلامی تحریکوں کا اگر گہرائی سے جائزہ لیا جائے تو یہ بات واضح ہوتی ہے کہ جہاں قیادت بابصیرت اور اپنے اھداف میں مخلص تھی وہاں کامیابیاں نصیب ہوئیں اور قربانیاں رنگ لائیں اور جہاں قیادت ۔۔
وهابیت

وهابیت

برطانوی سامراج کا لگایا یہ درخت ایک شجر سایہ دار میں تبدیل ہوکر طالبان،داعش،النصرہ۔الشباب اور بوکوحرام کی صورت میں اسلام اور مسلمانوں کو کھوکھلا کرنے میں پیش پیش ہے ۔
طالبان

طالبان

اسلام اور افغانستان کی آذادی کے نام پر وجود میں آنے والا یہ گروہ پاکستان اور افغانستان کے لئے ایک ایسے ناسور میں بدل گیا ہے جو نہ صرف اسلام کو بدنام کرنے میں پیش پیش ہے بلکہ اس کے وجود سے خطے کی اسلامی قوتوں کو بھی شدید نقصان
استقامتی محاز

استقامتی محاز

حزب اللہ کے جانثاروں نے اپنی لہو رنگ جد و جہد سے غاصب صیہونی حکومت کو ایسی شکست دی ہے جس سے خطے میں طاقت کا توازن مکمل طور پر تبدیل ہوتا نظر آرہا ہے اور استقامتی اور مقاومتی محاز
یمن

یمن

یمن کیجمہوری تحریک نے آل سعود سمیت خطوں کی دیگر بادشاہتوں کو نئے چیلنجوں سے دوچار کردیا ہے۔سعودی جارحیت آل سعود کے لئے ایک دلدل ثابت ہوگی۔
پاکستان

پاکستان

امریکی مداخلتوں کا شکار یہ ملک آج اس مرحلہ پر پہنچ گیا ہے کہ امریکہ کے علاوہ خطے کے بعض عرب ممالک بھی اسے اپنا مطیع و فرماندار بنانا چاہتے ہیں
داعش

داعش

سی آئی اے اور موساد کی مشترکہ کوششوں سے لگایا گیا یہ پودا جسے آل سعود کے خزانوں سے پالا پوساگیا اب عالم اسلام کے ساتھ ساتھ اپنے بنانے والوں کے لئے بھی خطرہ۔۔۔۔
alwaght.com
خبر

فوج ہر خطرے کا مقابلہ کرنے کو تیار ہے: راحیل شریف

Tuesday 20 September 2016
فوج ہر خطرے کا مقابلہ کرنے کو تیار ہے: راحیل شریف

الوقت - پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ پاکستانی فوج بالواسطہ اور بلاواسطہ خطرات سے نمٹنے کے لئے تیار ہے۔
پاکستانی فوج کے تعلقات عامہ کے شعبہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کور کمانڈروں کے اجلاس میں ملک کے سامنے موجود  داخلی اور بیرونی خطرات کا جائزہ لیا گیا۔
کور کمانڈروں کا یہ اجلاس ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کے اوڑی سیکٹر میں فوج کے بیس کیمپ پر شدت پسندوں کے حملے کے ایک دن بعد منعقد کیا گیا تھا۔
اس حملے میں 18 ہندوستانی فوجی ہلاک اور کئی دیگر زخمی ہو گئے تھے۔

 


اتوار کی صبح شمالی کشمیر میں ہندوستان -  پاکستان کنٹرول لائن کے  پاس اڑی میں ہندوستانی سکیورٹی فورسز اور حملہ آوروں کے درمیان جھڑپیں تقریبا پانچ گھنٹے تک جاری رہیں۔
ہندوستانی فوج کے شمالی کمان کے ترجمان کے مطابق اتوار کو ہوئے حملے میں 17 فوجی ہلاک ہو گئے تھے جبکہ ایک زخمی فوجی زخموں کی تاب نہ لا کر ہلاک چل بسا۔
پاکستانی فوج کی جانب سے جاری بیان کے مطابق جنرل راحیل شریف نے ہندوستانی کی جانب سے دئے گئے بیانات کے حوالے سے کہا گیا کہ ہم اس علاقے میں تازہ واقعات اور ان کے پاکستان کی سلامتی  پر پڑنے والے اثرات پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ ''
جنرل شریف نے کہا کہ پاکستانی مسلح افواج نے عوام کے ساتھ ہر چیلنج کا کامیابی سے سامنا کیا ہے۔ ملک کی خود مختاری اور اقتدار اعلی کو نقصان پہنچانے کی ہر کوشش کو ناکام بنایا جائے گا۔
ہندوستان کے ڈائریکٹر جنرل آف ملٹری آپریشن یا ڈي جي ایم او لیفٹیننٹ جنرل رنبیر سنگھ نے پیر کو ایک بیان میں کہا کہ چاروں شدت پسندوں کا تعلق جیش محمد سے تھا۔
انہوں نے کہا کہ حملہ آوروں کے پاس کچھ ایسی اشیاء تھیں جن پر پاکستان لکھا ہوا تھا۔

 


اڑی حملے کے بعد ہندوستان کے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ پاکستان ایک دہشت گرد ریاست ہے۔ اس کی شناخت ایک دہشت گرد ملک کے طور پر کی جانی چاہئے اور اسے الگ تھلگ کرنے کی ضرورت ہے۔

ٹیگ :

پاکستان آرمی چیف راحیل شریف اڑی سیکٹر حملہ کشمیر

نظریات
نام :
ایمیل آئی ڈی :
* ٹیکس :
سینڈ

Gallery

تصویر

فلم

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے