:: الوقت ::

ہمارا انتخاب

خبر

زیادہ دیکھی جانے والی خبریں

ڈاکومینٹس

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت اپنے زوال کے سفر پر تیزی سے رواں دواں ہے اور ہرآنے والا دن اس غاصب اور غیر قانونی حکومت کو سیاسی تنہائیوں کی طرف دھکیل رہا ہے
اسلامی تحریکیں

اسلامی تحریکیں

ماضی اور حال کی اسلامی تحریکوں کا اگر گہرائی سے جائزہ لیا جائے تو یہ بات واضح ہوتی ہے کہ جہاں قیادت بابصیرت اور اپنے اھداف میں مخلص تھی وہاں کامیابیاں نصیب ہوئیں اور قربانیاں رنگ لائیں اور جہاں قیادت ۔۔
وهابیت

وهابیت

برطانوی سامراج کا لگایا یہ درخت ایک شجر سایہ دار میں تبدیل ہوکر طالبان،داعش،النصرہ۔الشباب اور بوکوحرام کی صورت میں اسلام اور مسلمانوں کو کھوکھلا کرنے میں پیش پیش ہے ۔
طالبان

طالبان

اسلام اور افغانستان کی آذادی کے نام پر وجود میں آنے والا یہ گروہ پاکستان اور افغانستان کے لئے ایک ایسے ناسور میں بدل گیا ہے جو نہ صرف اسلام کو بدنام کرنے میں پیش پیش ہے بلکہ اس کے وجود سے خطے کی اسلامی قوتوں کو بھی شدید نقصان
استقامتی محاز

استقامتی محاز

حزب اللہ کے جانثاروں نے اپنی لہو رنگ جد و جہد سے غاصب صیہونی حکومت کو ایسی شکست دی ہے جس سے خطے میں طاقت کا توازن مکمل طور پر تبدیل ہوتا نظر آرہا ہے اور استقامتی اور مقاومتی محاز
یمن

یمن

یمن کیجمہوری تحریک نے آل سعود سمیت خطوں کی دیگر بادشاہتوں کو نئے چیلنجوں سے دوچار کردیا ہے۔سعودی جارحیت آل سعود کے لئے ایک دلدل ثابت ہوگی۔
پاکستان

پاکستان

امریکی مداخلتوں کا شکار یہ ملک آج اس مرحلہ پر پہنچ گیا ہے کہ امریکہ کے علاوہ خطے کے بعض عرب ممالک بھی اسے اپنا مطیع و فرماندار بنانا چاہتے ہیں
داعش

داعش

سی آئی اے اور موساد کی مشترکہ کوششوں سے لگایا گیا یہ پودا جسے آل سعود کے خزانوں سے پالا پوساگیا اب عالم اسلام کے ساتھ ساتھ اپنے بنانے والوں کے لئے بھی خطرہ۔۔۔۔
alwaght.com
تجزیہ

نائجیریا کے گرفتار رہنما کے فرزند کا المناک خط

Monday 25 July 2016
نائجیریا کے گرفتار رہنما کے فرزند کا المناک خط

الوقت - نائجیریا کے شیعہ رہنما شیخ ابراھیم زکزکی کے بیٹے محمد زکزکی نے ایک خط میں لکھا کہ میں دنیا کے ہر انسان سے جو عدالت اور انسانی کرامت پر یقین رکھتے ہیں، درخواست کرتا ہوں کہ زیادہ سے زیادہ کوشش کرنے کے لئے میرا ساتھ دیں۔

محمد زکزکی نے اپنے کھلے خط میں اپنے والد ماجد پر ہونے والے مظالم اور ان کی خراب صورتحال کا حوالہ دیا۔  محمد زکزکی کے خط میں  نائجیریا کے مسلمانوں کے خلاف فوج کے مظالم اور تشدد  خاص طور پر اس ملک کے شیعہ مذہبی رہنما شیخ زکزکی پر ہونے والے مظالم کی جانب اشارہ کیا گیا ہے۔ اس خط میں آیا ہے کہ  ہماری بچپن کی کچھ یادیں میری پرائیوٹ یادیں ہیں، میں اسے سب سے بیان نہیں کر سکتا، لیکن موجود صورتحال کے مدنظر، احساس کرتا ہوں کہ اس کے ایک حصے کو سب کے ساتھ شیئر کروں، خاص طور سے ااس وقت کے میں اپنی زندگی سے مایوس ہو چکا ہوں اور اب مجھے زندگی کی کوئی خواہش نہیں ہے۔  میں محمد ابراہیم ہوں البتہ میرے دوست مجھے ابراہیم ہی کے نام سے جانتے ہیں۔  ایک دن میں نے اپنے گھر میں ایک چوہے کو مارا، چوہے کی موت میرے لئے کبھی فراموش نہ ہونے والا تجربہ ثابت ہوا۔  میں چوہے سے بڑی کوئی بھی چيز نہیں مار سکتا، جبکہ کچھ مسلح افراد نے میرے تمام بھائیوں کو گولیوں سے بھون دیا۔ اسی طرح ان کے ساتھ، خواتین، مردوں اور بچوں کو بھی موت کے گھاٹ اتار دیا۔ ان ہلاک شدگان میں ڈاکٹر، نرس، انجینئر، نامہ نگار اور سرکاری ملازم خواتین اور مرد سب ہی شامل تھے۔ طلبہ اور طالبات جن کے دل میں اپنے اہداف کے حصول کی آرزویں موجزن تھیں، دوست و یار و مددگار سبھی کو اپنے خاندان کے افراد کے ساتھ فوج نے موت کی آغوش میں سلا دیا۔ اس المناک حادثے کے بعد کادونا کی مقامی حکومت نے ایک کمیشن کی تشکیل کی اطلاع دی جس کی ذمہ داری تھی کہ وہ فوج کے ہاتھوں ہوئے عام لوگوں کے قتل عام کی تحقیقات کرے۔ اس المناک واقعے میں ہزاروں بے گناہ افراد کو نظرانداز کر دیا گیا، 340 سے زائد افراد کو اجتماعی قبروں میں دفن کر دیا گیا، سیکڑوں افراد کو گرفتار کر لیا گیا اور ان کے املاک و گھروں کو تاراج اور نابود کر دیا گیا۔ گرچہ اس سرکاری کمیشن میں تحریک کے کسی بھی مسلمان کو شامل نہیں کیا گیا ہے لیکن خود ہی تحقیقات کے نتائج کا جائزہ لوں گا۔

سرکاری خدمات کے ادارے ڈی ایس ایس(DSS)  نے دعوی کیا ہے کہ  میرے والد محترم سخت سیکورٹی میں نظر بند ہیں کیونکہ ان کو نقصان پہنچ سکتا ہے اور ان کے وکیل کے بقول یہ سرکاری خدمات کے ادارے کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنے شہریوں کو نقصان ہونے سے روک سکیں۔ ان سب سے بدتر چيز یہ ہے کہ دعوی یہ کیا جا رہا ہے کہ پچاس لاکھ نایرا (نائجیریا کا پیسہ) صرف ان کی سیکورٹی پر خرچ ہو رہا ہے۔ یہ ناقبل برداشت ہے کہ میں اپنے تین بھائیوں سمیت تمام بے گناہ افراد کے قتل عام کا تماشہ دیکھوں۔ گرچہ میرے والد اور میری ماں جیل میں تو نہیں ہیں لیکن نہ تو ان ہی راحت ہے اور نہ سیکورٹی ہے۔  نائجیریا کی فوج نے گزشتہ آٹھ مہینے کے دوران میرے بھائیوں، میرے چچا اور میرے بہت سے رشتہ داروں سمیت ہزاروں بے گناہ افراد کو قتل کر دیا۔ میری والدہ محترمہ پر سات راونڈ فائرنگ ہوئی۔ میرے والد کی ایک آنکھ خراب ہونے کے علاوہ ان کا ہاتھ اور پیر فالج زدہ ہو گیا۔ اس حالت میں بھی ان کو ڈاکٹروں اور قانونی افراد تک رسائی ممکن نہیں بنائی جا رہی ہے جبکہ ڈی ڈی سی ان کی حفاظت کا دعوی کر رہی ہے۔  میں جب بھی اپنے والد کی ڈاکٹر سے ملاقات کرانے کی درخواست کرتا ہوں تو مختلف بہانوں سے ڈی ڈی سی کی جانب سے مسترد کر دیا جاتا ہے۔  

ٹیگ :

زکزکی نائجیریا زخمی ہلاک

نظریات
نام :
ایمیل آئی ڈی :
* ٹیکس :
سینڈ

Gallery

تصویر

فلم

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے

شیخ عیسی قاسم کی حمایت میں مظاہرے، کیمرے کی نظر سے