:: الوقت ::

ہمارا انتخاب

خبر

زیادہ دیکھی جانے والی خبریں

ڈاکومینٹس

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت

صیہونی حکومت اپنے زوال کے سفر پر تیزی سے رواں دواں ہے اور ہرآنے والا دن اس غاصب اور غیر قانونی حکومت کو سیاسی تنہائیوں کی طرف دھکیل رہا ہے
اسلامی تحریکیں

اسلامی تحریکیں

ماضی اور حال کی اسلامی تحریکوں کا اگر گہرائی سے جائزہ لیا جائے تو یہ بات واضح ہوتی ہے کہ جہاں قیادت بابصیرت اور اپنے اھداف میں مخلص تھی وہاں کامیابیاں نصیب ہوئیں اور قربانیاں رنگ لائیں اور جہاں قیادت ۔۔
وهابیت

وهابیت

برطانوی سامراج کا لگایا یہ درخت ایک شجر سایہ دار میں تبدیل ہوکر طالبان،داعش،النصرہ۔الشباب اور بوکوحرام کی صورت میں اسلام اور مسلمانوں کو کھوکھلا کرنے میں پیش پیش ہے ۔
طالبان

طالبان

اسلام اور افغانستان کی آذادی کے نام پر وجود میں آنے والا یہ گروہ پاکستان اور افغانستان کے لئے ایک ایسے ناسور میں بدل گیا ہے جو نہ صرف اسلام کو بدنام کرنے میں پیش پیش ہے بلکہ اس کے وجود سے خطے کی اسلامی قوتوں کو بھی شدید نقصان
استقامتی محاز

استقامتی محاز

حزب اللہ کے جانثاروں نے اپنی لہو رنگ جد و جہد سے غاصب صیہونی حکومت کو ایسی شکست دی ہے جس سے خطے میں طاقت کا توازن مکمل طور پر تبدیل ہوتا نظر آرہا ہے اور استقامتی اور مقاومتی محاز
یمن

یمن

یمن کیجمہوری تحریک نے آل سعود سمیت خطوں کی دیگر بادشاہتوں کو نئے چیلنجوں سے دوچار کردیا ہے۔سعودی جارحیت آل سعود کے لئے ایک دلدل ثابت ہوگی۔
پاکستان

پاکستان

امریکی مداخلتوں کا شکار یہ ملک آج اس مرحلہ پر پہنچ گیا ہے کہ امریکہ کے علاوہ خطے کے بعض عرب ممالک بھی اسے اپنا مطیع و فرماندار بنانا چاہتے ہیں
داعش

داعش

سی آئی اے اور موساد کی مشترکہ کوششوں سے لگایا گیا یہ پودا جسے آل سعود کے خزانوں سے پالا پوساگیا اب عالم اسلام کے ساتھ ساتھ اپنے بنانے والوں کے لئے بھی خطرہ۔۔۔۔
alwaght.com
خبر

راحیل شریف، سعودی اتحاد کی سربراہی کو آمادہ

Monday 14 March 2016
راحیل شریف، سعودی اتحاد کی سربراہی کو آمادہ

دنیا نیوز نے دعوی کیا ہے کہ پاکستان کے چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف نے کہا کہ وہ نومبر میں اپنے ریٹائرمنٹ کے بعد سعودی عرب کی قیادت میں بنے34 ممالک کے اتحاد کی سربراہی کرنے کو تیار ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نومبر کے مہینے میں جنرل راحیل شریف ریٹائر ہوجائیں گے اور ان کی مدت میں توسیع کے بارے میں خبریں بہت زیادہ منتشر نہیں ہوئی تھیں۔  پاکستانی فوج کے رابطہ عامہ دفتر کے ترجمان جنرل عاصم سلیم باجوہ نے فوجی سربراہ کی مدت میں توسیع پر مبنی خبروں کی سختی سے تردید کی تھی۔ واضح رہے کہ سعودی عرب کے فرمانروا نے تجویز دی تھی کہ فوجی اتحاد کی تشکیل نیٹو فوجی اتحاد کی طرح ہونی چاہئے اور انہوں نے اس پروگرام کو عملی جامہ پہنانے کے لئے پاکستان سے مدد کا مطالبہ کیا تھا۔

اس فوجی اتحاد کا پروگرام بنانے کی ذمہ داری پاکستان کے حوالے کی گئيں ہیں اور سعودی فرمانروا نے پاکستان سے اس اتحاد کی سربراہی کا مطالبہ کیا تھا۔  پاکستان اور سعودی عرب نے اس حوالے سے مذاکرات جاری رکھنے پر تاکید کی ہے۔ اس سے پہلے پاکستانی فوج کے سربراہ نے رعد شمالی فوجی مشقوں کا نزدیک سے جائزہ لینے کے لئے سعودی عرب کی تین روزہ دورہ کیا تھا۔ سعودی عرب نے دسمبر 2015 میں سعودی عرب نے 34 ممالک پر مبنی ایک نئے فوجی اتحاد کی اعلان کیا تھا جس میں پاکستان بھی شامل ہے۔ پاکستان نے کہا تھا کہ اس کے فوجی ماہرین اور مشیر اس فوجی اتحاد کا حصہ ہوں گے لیکن اس نے دوسرے ممالک میں جنگ کے لئے اپنے فوجی روانہ کرنے سے انکار کیا ہے۔

ٹیگ :

پاکستان راحیل شریف سعودی عرب فوجی اتحاد سربراہی

نظریات
نام :
ایمیل آئی ڈی :
* ٹیکس :
سینڈ

Gallery

تصویر

فلم